گول لال مرچوں سے نظر اتارنے کا طریقہ

للہ تبارک و تعالیٰ کا ارشاد گرامی ہے کہ وَإِنْ يَكَادُ الّذِينَ كَفَرُوا لَيُزْلِقُونَكَ بِأَبْصَارِهِمْ لَمّا سَمِعُوا الذّكْرَ اور بالکل قریب تھا کہ کافر آپ کو اُن کی نظروں کے ساتھ پِھسلا دیں ، جب انہوں نے یہ ذِکر قران کریم سُنا۔اس آیت شریفہ میں ہمیں اللہ تبارک وتعالیٰ کی طرف سے یہ خبر دی گئی ہے کہ انسان کی نظر میں ایسی تاثیر ہوتی ہے جو کسی دوسرے انسان کے جسم و جان پر اثر انداز ہوتی ہے ، اور تو اور ، اللہ کے رسولوں علیہم السلام پر بھی اس کا اثر ہوسکنے کی گنجائش تھی ، اگر ایسا نہ ہوتا تو اللہ تعالیٰ یہ مذکورہ بالا فرمان اِرشاد نہ فرماتا اور اللہ جلّ و عُلا نے اپنے نبی یعقوب علیہ السلام کا واقعہ بیان فرماتے ہوئے ، اُن علیہ السلام کا یہ قول بھی ذِکر فرمایا کہ وَقَالَ يَا بَنِيَّ لَا تَدْخُلُوا مِنْ بَابٍ وَاحِدٍ وَادْخُلُوا مِنْ أَبْوَابٍ مُتَفَرِّقَةٍ وَمَا أُغْنِي عَنْكُمْ مِنَ اللَّهِ مِنْ شَيْءٍ إِنِ الْحُكْمُ إِلَّا لِلَّهِ عَلَيْهِ تَوَكَّلْتُ وَعَلَيْهِ فَلْيَتَوَكَّلِ الْمُتَوَكِّلُونَ اور یعقوب علیہ السلام نے کہا ، اے میرے بیٹو ، ایک دروازے میں سے داخل مت ہونا ،

>

اور بلکہ مختلف دروازوں میں سے داخل ہونا، اور یہ سب احتیاط کے طور پر ہے کیونکہ میں اللہ کے حکم اور مشیئت کے سامنے تُم لوگوں کے لیے کسی چیز سے بچاؤ نہیں کر سکتا ، یقیناً حُکم اللہ کا ہے ، میں اُسی پر توکل کرتا ہوں اور اُسی پر اِیمان والے توکل کرتے ہیں ہر دور میں انسان کو کسی نہ کسی پریشانی کا سامنا رہے۔ ان پریشانیوں میں سے ایک پریشانی “نظرِ بد” کا ہے۔ جو ہمارے معاشرے میں بہت پھیلی ہوئی ہے۔ جو لوگ نظر بد کا شکار ہوجاتے ہیں ۔ ان کے لیے ایک وظیفہ ہے جو کہ مجر ب ہے ۔ اس وظیفہ کا قرآن اور حدیث میں ذکر ہے۔ اس وظیفہ کو چھوٹوں اور بڑوں پر عمل کر سکتے ہیں۔ اس کے لیے سب سے پہلے یہ کرنا ہے۔ کہ ہر گھرمیں لال مرچ ثابت موجود ہوتی ہے۔ اس لال مرچ کے سات دانے لے لینے ہیں ۔ جن بزرگوں،بڑوں اور چھوٹوں کو نظر بد لگی ہوئی ہو ۔تو اس کے لیے سب سے پہلے وضو کر لینا چاہیے۔اب مرچوں کو اپنے ہاتھ میں لے لیں۔ ایک بار درود شریف پڑھیں ۔

اس کے بعد سورت ا لکافرون 7 مرتبہ، سورت ا لاخلاص 3 مرتبہ اور سورت الناس 3 مرتبہ پڑھ لینا ہے۔ اور آخر میں ایک بار درود شریف کو پڑھ لینا ہے۔ ان سب کو اسی ترتیب سے پڑھنا ہے ۔ جب پڑھ لیں تو ان سات مرچوں پر پھونک ماردیں۔ پھر ان سات مرچوں کو سر سے لیکر پاؤں تک سات مرتبہ پھیریں۔ جس پر نظر لگی ہوئی ہو۔ جب سات مرتبہ پھیر لیں تو پھر سات مرتبہ سر کے اوپر سے پھیر لیں۔پھر اس کو چولہے پر رکھ جلادیں۔ جب یہ جل کر کوئلہ بن جائے تو چولہا کو بند کر دیں۔اکثر لوگوں کو معلوم نہیں ہوتا کہ نظر اتارنے کا وقت کب ہوتا ہے؟ کیونکہ سزا اور جزا کا کوئی وقت نہیں ہوتا اللہ جب چاہے سزا دے اور جب چاہے جزا دے ۔ بہتر یہی ہےکہ آپ عصر کے وقت اس عمل کو کر سکتے ہیں۔ وگرنہ کسی بھی وقت اتار سکتے ہیں۔ آپ یہ عمل کرکے دیکھیں انشاءاللہ ! اللہ کے فضل و کرم سے بزرگوں، بڑوں اور چھوٹوں سے نظر اتر جائے گی۔ اس عمل کو دو سے تین مرتبہ دہرا دیں۔ تو انشاءاللہ مریض ٹھیک ہوجائےگا۔ اب کئی ہمارے عقیدت مند یا متوسلین لوگ ہیں وہ پوچھتے ہیں کہ ہمیں اجازت ہے۔ یہ عمل ایسا نہیں ہے جس میں کسی کی اجازت کی ضرورت ہو۔ اس کو کوئی بھی شخص کر سکتا ہے۔ ہر گھر کے اندر یہ سات مرچیں مل جاتی ہیں۔ یہ ثابت لا ل مرچ لینی ہے۔ انشاءاللہ آپ اس عمل کو کریں گے تو آپ کو ضرور فائد ہ حا صل ہوگا۔ اس وظیفہ کی بدولت کسی بھی قسم کی نظربد سے محفوط رہیں گے۔ اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔آمی

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *