۔جب ہم اللہ سے کسی انسان کو پانے کی چاہت کرتے

لازمی پڑھیے ۔جب ہم اللہ سے کسی انسان کو پانے کی چاہت کرتے ہیں تو کیا ہوتا ہے ؟؟جب انسان اللہ سے کسی انسان کو بہت رو رو کر شدت سے مانگتا ہے ۔مگر وہ نہیں ملتا پھر ایک وقت آتا ہے جب انسان کے آنسو خشک ہو جاتے ہیں ۔بس جس انسان کو مانگ رہا ہوتا ہے اس سے وہ رب کا ہو جاتا ہے اسے حقیقی عشق اور محبوب مل جاتا ہے ۔جو پوری کائنات کا مالک ہے اللہ ۔اور اسی کو پانا سب سے بڑی چیز کو پانا ہے ۔پھر کیفیت بدل جاتی ہے ہر وقت اللہ کے ذکر میں رہنا بہت اچھا لگتا ہے ۔انسان کا دل کرتا ہے کہ وہ سجدے میں ہی پڑھا رہے ۔

>

عشق حقیقی سے لگن اور بڑھ جاتی ہے ۔دل کو ایک سکون سا اور اطمینان سا مل جاتا ہے ۔پھر اچانک سے جس انسان کو وہ پہلے مانگ رہا ہوتا ہے وہ مل جاتا ہے ۔اللہ تجھے تو کہتا ہے تم میرے کاموں میں لگ جاؤ میں تمہارے کام آسان کر دوں گا ۔اللہ تعالی کی عشق کو پانے کے بعد وہ اضطراب وہ کیفیت نہیں رہتی ۔کیونکہ حقیقی عشق تو اسے مل چکا ہوتا ہے ۔اور اللہ کا یہ حقیقی عشق ہر عشق کو بھلا دیتا ہے ۔بے شک ۔وہ اس دنیا میں رہنے لگتا ہے جہاں پر اس کو سکون ملتا ہے ۔اسی طرح وہ انسان اپنی دنیا اور آخرت کو سنوار لیتا ہے جو اللہ سے لو لگا لیتا ہے اور اللہ کی رضا میں راضی ہو جاتا ہے ۔

Sharing is caring!

Comments are closed.