ہلاکو خان کی بیٹی

ہلاکو خان کو تو آپ سب لوگ جانتے ہوں گے۔ کیونکہ وہ انتہائی ظالم بادشاہ تھا اور انہوں نے مسلمانوں پر کافی ظلم کی تھی۔ ہلاکو خان نے جب بغداد کو فتح کیا۔ ہلاکوخان کی بیٹی ایک دن بازار میں گشت کر رہی تھی۔ اس کی ایک ہجوم پر نظر پڑی۔ انہوں نے لوگوں سے دریافت کیا کہ یہاں کیوں نہیں ہوں تو جواب آیا کہ ہم ایک عالم کے ساتھ کھڑے ہیں ہلاکو خان کی بیٹی عالم کو اپنے سامنے پیش کرنے کا حکم دیا۔ کے عالم کو تاتاری کی شہزادی کے سامنے لایا جائے۔

>

اور جب ہلاکو خان کی بیٹی کے سامنے عالم پیش ہوا۔ تو شہزادی نے عالم سے پوچھا۔ کہ آپ اللہ پہ یقین رکھتے ہیں عالم ہاں ہمیں یقین رکھتے ہیں کیا تمہارا ایمان نہیں کہ اللہ جسے چاہے غالب کر دیتا ہے عالم جی ہاں ہماری ہی ایمان ہے کہ اللہ جسے چاہے اس سے غا لب کرتا ہے۔ تو کیا اللہ تعالی نے آج ہمیں آپ لوگوں پر غالب نہیں کیا۔ عالم یقیناً کردیا۔ﺷﮩﺰﺍﺩﯼ : ﺗﻮ ﮐﯿﺎ ﯾﮧ ﺍﺱ ﺑﺎﺕ ﮐﯽ ﺩﻟﯿﻞ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﮧ ﺧﺪﺍ ﮨﻤﯿﮟ ﺗﻢ ﺳﮯ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﭼﺎﮨﺘﺎ ﮨﮯ؟ﻋﺎﻟﻢ : ﻧﮩﯿﮟﺷﮩﺰﺍﺩﯼ : ﮐﯿﺴﮯ؟ﻋﺎﻟﻢ : ﺗﻢ ﻧﮯ ﮐﺒﮭﯽ ﭼﺮﻭﺍﮨﮯ ﮐﻮ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﮨﮯ؟ﺷﮩﺰﺍﺩﯼ : ﮨﺎﮞ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﮨﮯﻋﺎﻟﻢ : ﮐﯿﺎ ﺍﺱ ﮐﮯ ﺭﯾﻮﮌ ﮐﮯ ﭘﯿﭽﮭﮯ ﭼﺮﻭﺍﮨﮯ ﻧﮯ ﺍﭘﻨﮯ ﮐﭽﮫ ﮐﺘﮯ ﺑﮭﯽ ﺭﮐﮫ ﭼﮭﻮﮌﮮ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ؟ﺷﮩﺰﺍﺩﯼ : ﮨﺎﮞ ﺭﮐﮭﮯ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ۔ﻋﺎﻟﻢ : ﺍﭼﮭﺎ ﺗﻮ ﺍﮔﺮ ﮐﭽﮫ ﺑﮭﯿﮍﯾﮟ ﭼﺮﻭﺍﮨﮯ ﮐﻮ ﭼﮭﻮﮌ ﮐﻮ ﮐﺴﯽ ﻃﺮﻑ ﮐﻮ ﻧﮑﻞ ﮐﮭﮍﯼ ﮨﻮﮞ ، ﺍﻭﺭ ﭼﺮﻭﺍﮨﮯ ﮐﯽ ﺳﻦ ﮐﺮ ﺩﯾﻨﮯ ﮐﻮ ﺗﯿﺎﺭ ﮨﯽ ﻧﮧ ﮨﻮﮞ ، ﺗﻮ ﭼﺮﻭﺍﮨﺎ ﮐﯿﺎ ﮐﺮﺗﺎ ﮨﮯ؟ﺷﮩﺰﺍﺩﯼ : ﻭﮦ ﺍﻥ ﮐﮯ ﭘﯿﭽﮭﮯ ﺍﭘﻨﮯ ﮐﺘﮯ ﺩﻭﮌﺍﺗﺎ ﮨﮯ ﺗﺎﮐﮧ ﻭﮦ ﺍﻥ ﮐﻮ ﻭﺍﭘﺲ ﺍﺱ ﮐﯽ ﮐﻤﺎﻥ ﻣﯿﮟ ﻟﮯ ﺁﺋﯿﮟ۔ﻋﺎﻟﻢ : ﻭﮦ ﮐﺘﮯ ﮐﺐ ﺗﮏ ﺍﻥ ﺑﮭﯿﮍﻭﮞ ﮐﮯ ﭘﯿﭽﮭﮯ ﭘﮍﮮ ﺭﮨﺘﮯ ﮨﯿﮟ؟ﺷﮩﺰﺍﺩﯼ : ﺟﺐ ﺗﮏ ﻭﮦ ﻓﺮﺍﺭ ﺭﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﭼﺮﻭﺍﮨﮯ ﮐﮯ ﺍﻗﺘﺪﺍﺭ ﻣﯿﮟ ﻭﺍﭘﺲ ﻧﮧ ﺁﺟﺎﺋﯿﮟ۔ﻋﺎﻟﻢ : ﺗﻮ ﺁﭖ ﺗﺎﺗﺎﺭﯼ ﻟﻮﮒ ﺯﻣﯿﻦ ﻣﯿﮟ ﮨﻢ ﻣﺴﻠﻤﺎﻧﻮﮞ ﮐﮯ ﺣﻖ ﻣﯿﮟ ﺧﺪﺍ ﮐﮯ ﭼﮭﻮﮌﮮ ﮨﻮﺋﮯ ﮐﺘﮯ ﮨﯿﮟ؛ ﺟﺐ ﺗﮏ ﮨﻢ ﺧﺪﺍ ﮐﮯ ﺩﺭ ﺳﮯ ﺑﮭﺎﮔﮯ ﺭﮨﯿﮟ ﮔﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﯽ ﺍﻃﺎﻋﺖ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﮯ ﻣﻨﮩﺞ ﭘﺮ ﻧﮩﯿﮟ ﺁﺟﺎﺋﯿﮟ ﮔﮯ،

ﺗﺐ ﺗﮏ ﺧﺪﺍ ﺗﻤﮩﯿﮟ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﭘﯿﭽﮭﮯ ﺩﻭﮌﺍﺋﮯ ﺭﮐﮭﮯ ﮔﺎ ، ﺗﺐ ﺗﮏ ﮨﻤﺎﺭﺍ ﺍﻣﻦ ﭼﯿﻦ ﺗﻢ ﮨﻢ ﭘﺮ ﺣﺮﺍﻡ ﮐﯿﮯ ﺭﮐﮭﻮﮔﮯ؛ ﮨﺎﮞ ﺟﺐ ﮨﻢ ﺧﺪﺍ ﮐﮯ ﺩﺭ ﭘﺮ ﻭﺍﭘﺲ ﺁﺟﺎﺋﯿﮟ ﮔﮯ ﺍُﺱ ﺩﻥ ﺗﻤﮩﺎﺭﺍ ﮐﺎﻡ ﺧﺘﻢ ﮨﻮﺟﺎﺋﮯ ﮔﺎ۔ ﻣﺴﻠﻤﺎﻥ ﻋﺎﻟﻢ ﮐﮯ ﺍﺱ ﺟﻮﺍﺏ ﻣﯿﮟ ﺁﺝ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﻏﻮﺭﻭﻓﮑﺮ ﮐﮯﻟﯿﮯ ﺑﮩﺖ ﮐﭽﮫ ﭘﻮﺷﯿﺪﮦ ﮨﮯ. کیونکہ آج ہم اللہ اور رسول کے راستے سے بھٹک گئے ہیں۔ جو ہمارے لئے کامیابی کا راستہ ہے۔ اور جب تک مسلمان اپنے اصل راستے پر نہیں آئے گا۔ تو وہ کبھی بھی کامیاب نہیں ہوگی۔بغداد ﭘﺮ ﺗﺎﺗﺎﺭﯼ ﻓﺘﺢ ﮐﮯ ﺑﻌﺪ ، ﮨﻼﮐﻮ ﺧﺎﻥ ﮐﯽ ﺑﯿﭩﯽ ﺑﻐﺪﺍﺩ ﻣﯿﮟ ﮔﺸﺖ ﮐﺮﺭﮨﯽ ﺗﮭﯽ ﮐﮧ ﺍﯾﮏ ﮨﺠﻮﻡ ﭘﺮ ﺍﺱ ﮐﯽ ﻧﻈﺮ ﭘﮍﯼ۔ ﭘﻮﭼﮭﺎ ﻟﻮﮒ ﯾﮩﺎﮞ ﮐﯿﻮﮞ ﺍﮐﭩﮭﮯ ﮨﯿﮟ؟ﺟﻮﺍﺏ ﺁﯾﺎ : ﺍﯾﮏ ﻋﺎﻟﻢ ﮐﮯ ﭘﺎﺱ ﮐﮭﮍﮮ ﮨﯿﮟ۔ ﺩﺧﺘﺮِ ﮨﻼﮐﻮ ﻧﮯ ﻋﺎﻟﻢ ﮐﻮ ﺍﭘﻨﮯ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﭘﯿﺶ ﮨﻮﻧﮯ ﮐﺎ ﺣﮑﻢ ﺩﯾﺎ۔ ﻋﺎﻟﻢ ﮐﻮ ﺗﺎﺗﺎﺭﯼ ﺷﮩﺰﺍﺩﯼ ﮐﮯ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﻻۓ۔

Sharing is caring!

Comments are closed.