کیلے اور بجلی کا بل، ایک عجیب مگر حیران کر دینے والی تحریر

ڈیلی کائنات! کیلے اور بجلی کا بل، واپڈا آفس کے سامنے ایک شخص کیلے بیچ رہا تھا، محکمہ کے ایک بڑے افسر نے پوچھا کیلے کیسے دیتے ہو کیلے کس کے لئے خرید رہے ہو صاحب؟ افسر۔ کیا مطلب؟ کیلے والا : مطلب یہ کہ یتیم خانے کے لیے لے رہے ہو تو 10 روپیہ درجن، اولڈ ہوم کے لیے لے رہے ہو تو 15 روپیہ درجن، بچوں کے ٹفن کے لیے 20 روپیہ درجن، گھر کھانے کے لیئے لے رہے ہو تو 25 روپیہ درجن،
اگر پکنک کے لئے خریدنے ہوں تو 30 روپیہ درجن افسر یہ کیا بیوقوفی ہے؟ارے بھائی جب سب کیلے ایک جیسے ہیں تو ریٹ الگ الگ کیوں؟ کیلے والا: پیسے کی وصولی کا اسٹائل تو آپ لوگوں والا ہی ہے، جیسے 1 سے 100 ریڈنگ کا الگ ریٹ،100 سے 200 کا الگ ریٹ، 200سے 300 کا الگ، بجلی تو آپ ایک ہی کھمبے سے دیتے ہو؟ تو پھر گھر کے لئے الگ ریٹ دکان کے لئے الگ ریٹ کارخانے کا الگ ریٹ اور ایک بات اور میٹر کا بھاڑا الگ میٹر کیا امریکہ سے امپورٹ کیا ہے 25 سال سے بھاڑا بھر رہا ہوں آخر میٹر کی قیمت کتنی ہےآپ بتا دو مجھے ایک بار،کڑوا سچ۔ پوسٹ کو زیادہ سے زیادہ شیئر کریں

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *