’’نکاح تب کروں گی جب علی کو مسلمان کرو ‘‘

لاہور(ویب ڈیسک) وہ سرنام سے تعلق رکھتی تھی ، مذہباً شاید مسلمان نہیں تھی۔علی کو ویرہاؤس میں ملی تھی ، پھر دونوں میں دوستی ہوئی جو جلد ہی محبت میں بدل گئیعلی نے شادی کی شرط رکھی کہ پہلے تم مسلمان ہو جاؤ ، اسے اپنے مذہب سے کوئی لگاؤ تو تھا نہیں اس لیے فورا اسلام قبول کرنے پر راضی ہو گئی۔۔۔۔۔علی اسے ایک مقامی مسجد لے گیا ، جہاں مولوی صاحب نے اس سے عہد لیا کہ کبھی شراب نہیں پیئے گی ، زنا نہیں کرے گی ، جھوٹ نہیں بولے گی وغیرہ وغیرہ ۔اس نے خوشدلی سے سب وعدے کیے اور کلمہ حق کہہ کر اسلام میں داخل ہو گئی۔

>

جب مولوی صاحب نکاح پڑھانے لگے تو اس نے ایک عجب بات کہہ ڈالی ، جسے سن کر سب حیران ہو گئے۔کہنے لگی :’’ مولوی صاحب ، رکو پہلے علی کو تو مسلمان کر دو‘‘مولوی صاحب بولے :’’ بیٹا ! علی تو پہلے سے ہی مسلم ہے ‘‘۔وہ حیرانی سے کہنے لگی :’’ لیکن آپ نے جو مجھ سے نہ کرنے کے لیے کہا وہ سب تو علی کرتا ہے پھر یہ کیسے مسلمان ہوا۔۔۔۔۔ ؟

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *