میں نے کہا اس لڑکی کو آپ لوگ کہاں لے جا رہے ہو

کل رات ٹول پلازہ میں ڈیوٹی پر بیٹھا تھا، گاڑی والوں سے معمول کے مطابق ٹول لے رھا تھا۔ اچانک ایک کار آئی جس میں چار لڑکے اور ایک لڑکی بیٹھی تھی۔ اور وہ مسلسل روۓ جا رہی تھی، میں نے کہا اس لڑکی کو آپ لوگ کہاں لے جا رہے ہو۔ یہ تو میرے دوست حسیب کی بہن ہے، میں نے ان کار والوں کو روک لیا، باہر جا کر اپنے آرمی کے کمانڈر کو بلایا جب وہ آ گئے تو کیا دیکھتے ہیں۔

>

وہ لڑکی اکیلی روڈ پر کھڑی رو رہی ہے، اور وہ لڑکے بھاگ گے تھے پھر میں نے سوچا جا کے بات کروں کیا معاملہ ہے۔ پھر دماغ میں خیال آیا میرا جانا مناسب نہیں اپنے شفٹ کمانڈر کو کہا، کہ آپ جاٶ اور اس سے پوچھو کہاں جانا ہے۔ جب کمانڈر صاحب نے بات کی تو اس نے سب سچ سچ بتانا شروع کر دیا کہ میں فلاں لڑکے سے محبت کرتی تھی۔ جو کہ میرا جاننے والا ہے اس نے مجھے گھر سے بٹھایا، اور رات دو بجے ھم روانہ ھو گئے میں بہت خوش تھی لیکن دل ڈر رہا تھا۔ جس کو میں اپنا خیر خواہ سمجھ رہی تھی، وہ بار بار کال ملا رہا تھا راستے میں اس نے اپنے دوستوں کو بھی ساتھ میں لے لیا شور کرنے کو دل چاہا، پھر یہ سوچ کے چپ ہو گٸ کے خود ہی اپنا گھر چھوڑ کے آئی ہوں۔ نا اپنی بیوہ ماں کا خیال آیا اور ناہی اپنی بہنوں کا۔ سارے راستے یہی دعا کرتی رہی، یا اللہ اس بار معاف کر دے ارو مجھے بچا لے دوبارہ ایسی غلطی نہیں کرونگی۔ میں چونکہ دور کھڑا تھا، اور میری طرف اشارہ کرتے ہوۓ کہا آپ اس بھائی کا شکریہ ادا کر دیجیے گا۔ اس کے پاس گھر جانے کا کرایہ بھی نہیں تھا، کمانڈر اسے اپنی آرمی کی گاڑی میں اس کے گھر چھوڑ آئے تا کہ صبح ہونے سے پہلے پہلے وہ گھر ہو۔ خدارا میری تمام بہنوں سے گزارش ہے اپنی نا سہی اپنے والدین کی عزت کا تو خیال رکھا کریں گھر والوں سے زیادہ آپ کو عزت کوئی نہیں دے گا۔ رہی محبت کی بات تو وہ اپنے رب سے کریں جتنی محبت آپ اللہ سے کریں گے۔ وہ اتنی بلندیاں دے گا ایک دفعہ اس کے در پہ آ کر تو دیکھیں اور رہا سوال لڑکے اور لڑکی کی محبت کا یہ تو آجکل جسموں کا سودا ہے کسی کو راس آ جاتا ہے تو کسی کی جان لے لیتا ہے۔ اگر تحریر بری لگتی ہوں تو معافی چاہتا ہوں مزید ایسی پوسٹوں اور اچھی اچھی تحریروں کے لئے پیج فالو کریں ش

Sharing is caring!

Comments are closed.