لڑکی نے شادی کی پہلی رات کے متعلق بہت بڑی بات کر دی

سلام آباد(نیوز ڈیسک) ٹی وی کے پروگرام میں خاتون کالر نے فون پر اپنے خاوند کی جانب سے کیے جانے والے مظالم کی داستان سناتے ہوئے بتایا کہ شادی کی پہلی رات اس کے شوہر نے فیس بک پاس ورڈ مانگا او ر میرے تمام دوستوں کو انتہائی خراب میسج بھیج دیے اور بعد میں مجھے وارننگ دیتے ہوئے کہا۔

کہ اگر اب سے تمہارے دوستوں کے میسج اگر موصول ہوئے تو وہ دن تمہاری زندگی کا آخری دن ہو گا۔ تفصیلات کے مطابق خاتون کالر ٹی وی پروگرام کی ہوسٹ سے گفتگو کے دوران مسلسل رو رہی تھی اور اس کی باتیں سن کر پروگرام میں بھی ایک دم خاموشی چھا گئی تھی، خاتون نے اسی دوران بتایا کہ اس کی شادی کو چھ مہینے ہو گئے ہیں ،شادی سے پہلے زیادہ اچھی زندگی تھی ،دوستوں کے ساتھ گھومتی تھی اور ماں باپ کی اکلوتی بیٹی ہوں ، انہوں نے جو چاہا دیا ہے ،شادی سے پہلے اپنی زندگی میں کسی قسم کی اونچ نیچ نہیں دیکھی تھی لیکن پھر ایک شخص میری زندگی میں آیا اور میں نے کبھی نہیں سوچا تھا کہ میری اس سے شادی ہو گی ۔خاتون کا کہنا تھا کہ وہ شخص میرے پیچھے پڑ گیا اور مجھے تحفے دینے لگا، وہ بہت زیادہ کیرنگ تھا ،میں ایسے شخص کے ساتھ شادی نہیں کر سکتی ،گھر والوں نے مجھ پر شادی کیلئے زور ڈالنا شروع کر دیا جب کہ خاندان والے بھی شادی کے حوالے سے میرے پر زور ڈالنے لگے۔ خاتون کا کہنا تھا کہ اسی دوران اس شخص کے گھر سے بھیمیرے لیے رشتہ آ گیا۔

میں نے سوچا شادی کے بعد وہ ٹھیک ہو جائیں گے، شادی کو ابھی صرف چھ مہینے گزرے ہیں مجھے لگ رہا ہے یہ چھ مہینے نہیں یہ چھ سال ہیں ،شادی کی پہلی رات اس نے مجھ سے کہا کہ اپنی فیس بک کا پاس ورڈ دو ،میں نے خاموشی سے اپنے فیس بک اکاﺅنٹ کا پاسورڈ دیدیا اور اس نے میرے سارے دوستوں کو بہت خراج میسج کیے ان کو بلاک اور ڈیلیٹ کر دیا اور مجھے ڈراتے ہوئے کہا کہ اگر آئندہ تمہارے موبائل پر کسی لڑکے کے نمبر سے یا کسی اور کا میسج دیکھا تو وہ دن تمہاری زندگی کا آخری دن ہوگا۔ خاتون کا کہنا تھا کہ میرے شوہر نے میرا پانچ سال پرانا نمبر بند کروا دیا اور مجھے نیا موبائل نمبر لا کر دے دیدیا اور کہا کہ اس نمبر سے میں صرف اپنے ماں باپ سے بات کرسکتی ہوں اس کے علاوہ اس نمبر سے کسی کو فون نہیں کرنا ، میں نے ہر چیز خاموشی تسلیم کر لی ۔خاتون کا کہنا تھا کہ شادی کے بعد اگر ہم گھر سے باہر کھانا کھانے جاتے تو راستے میں اگر کوئی شخص مجھے گھور کر دیکھتا تو میرا شوہر اسے کچھ کہنے کی بجائے مجھے گھر واپس آنے پر اپنا نشانہ بناتا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *