علینہ کو منفرد شرارت سوجی تھی

علینہ کو منفرد شرارت سوجی تھی .اسنے عایشہ کے نام سے بھی ایک آئی ڈی بنائی.اور وہ بیک وقت دونوں کے ذریعے فیس بک پراپنے دیرینہ لور سعد سے مخاطب تھی.سعد کی نظریں سکرین پر جمی ہوئی تھی۔ اس کی انگلیاں تیزی سے کی بورڈ پر چل رہی تھی۔ اور دماغ اس سے بھی زیادہ تیز رفتاری سے سوچ رہا تھا۔ اسکے بے ساختہ محبت بھرے پیارے جملے علینہ کو روزانہ کی طرح محظوظ کر رہے تھے۔

فیس بک پر ان کی ملاقات کو زیادہ وقت نہیں ہوا تھا۔ لیکن انہیں لگتا تھا۔ کہ جیسے وہ صدیوں سے ایک دوسرے کو جانتے ہوں مختلف موضوعات پر روزانہ کی بنیاد پر ہونے والی گفتگو نے انہیں بے تکلف کر دیا تھا اور اب انہیں احساس ہونے لگا تھا۔ کے جیسے وہ ایک دوسرے کے بنا نہیں رہ سکیںگے۔ پیار محبت سے کام بڑھ چکا تھا۔ آج علینہ تقریبا دو ہفتوں بعد آن لائیں آئی تھی۔ اس کے آتے ہی سعد نے اس کی غیر حاضری سے متلعق اپنی بے تحاشا پریشانی کا اظہار کرتے ہوۓ اس سے سوالات کرنا شروع کردیے۔ کہاں تھی کدھر تھی بیمار تو نہیں ہو گی پتہ کتنا مس کیا وغیرہ وغیرہ۔ علینہ نے جواب دینے کے بجاۓ سعد سے ایک سوال پوچھااور سعد اس اچانک سوال سے سٹپٹا سا گیا۔ سعد نے سوال کو ایک بار پھر پڑھا” سعدی مجھے بتاو کہ سچی محبت کیا ہوتی ہے۔”سعد کا ادیبانہ ذہن پوری رفتار سے چل پڑا۔ اور اسکی انگلیاں کی بورڈ پر رقص کرنے لگی دنیا جہاں کے جھوٹ ہمدردی سمیٹے ہویےبالآخر اسنے جواب دیا۔ کہ سچی محبت وہ ہوتی ہے جو کچھ کھونے کے ڈرسے آزاد ہو۔ دولت شہرت سب اسکے سامنے ہیچ ہو۔ حتی کے آپ اپنا وجود اور زندگی اسکیلیے داؤ پر لگاسکیں ۔محبت صرف اور صرف کچھ پانے کا نام نہیں۔

اس سے پہلے کے سعد اپنی بات پوری کرتا علینہ نے اسے روک دیا اور دوسرا سوال پوچھا۔ اچھا تم نے جو میری تصویر دیکھی ہے۔ اگر اب میں ویسے نہ رہی ہوں تو بھی کیا تم مجھہ سے محبت کروگے ؟سعد نے سوال کو بغور پڑھا اور اسے علینہ کی شرارت سمجھ کر۔ اسکی حسین تصویریں جو وہ کچھ دن پیلے دے چکی تھی ان سب کو کمپیوٹر کی فایل سے نکال کرغور سے دیکھتے ہوۓ جواب دیاسچی محبت کبھی جسم سے نہیں ہوتی .بلکہ یہ روح سے ہوتی ہے .میں تمھاری روح سے محبت کرتا ہوں علینہ جان میری محبت تمھارے جسم کو پانے کی گندی خواہش کی کثافت سے پاک ہے۔ علینہ نےسعد کا جواب پاکر بڑی محنت سے فوٹو شاپ سے تیار کردہ اپنی جلی ہوئی تصویر اسے سینڈ کی جسمیں اسکا آدھا چہرہ بری طرح جلا ہوا تھا اور ساتھ میں لکھا میں پچھلے کچھ دنوں سے اسلیے غائب تھی۔ کے گھر پر ایک حادثے میں میں بری طرح جل گئی تھی۔ کیا اس تصویر کو دیکھنے کے بعد بھی تم مجھہ سے اپنی محبت کے دعویٰ پر قائم رہوگے سعدی ؟ اور مجھے اپنا جون ساتھی بنا کر ہماری دوستی کو ایک قابل عزت رشتے کا نام دوگےبولو سعدی جواب دو ؟ سعد نے بغور تصویر کو دیکھا ۔

جلے ہوۓ حسین چہرے کی بھیانک آگ میں اسکی سچی محبت دھواں بن کرفورا اڑگئی اسنے کوئی جواب دینے کے بجاۓ خاموشی سے علینہ کو انفرینڈ کرکے بلاک کر دیا ساتھ شکر کیا ک جان بچی اس بلا سے۔ اسی وقت اسے کسی عایشہ نامی لڑکی کا انباکس میں میسج آیا۔ وہ کہہ رہی تھی میں آپ کی تحریروں سے بہت زیادہ متاثر ہوں آپ بہت عمدہ قسم کا لکھتے ہیں۔ سر میں جاننا چاہتی ہوں آپ کے خیال میں سچی محبت کیا ہوتی ہے؟ سعد نے سوال کو غور سے دیکھا اور ایک ہی دن میں ایک جیسے سوال کے اتفاق پر مسکرادیا۔ اور اس کی انگلیاں کی بورڈ پر رقص کرنے لگی۔ سچی محبت وہ ہوتی ہے جو کچھ کھونے کے ڈر سے آزاد ہو۔ تو دوستو یہ ہے سچی محبت سوشل نیٹورک کوی بھی ہو چاہے فیس بک چاہے واٹس ایپ یا کوی اور تو ان سے بچیں حلال رشتے چھوڑ کر ان چکنی چپڑی باتوں کا سب سے زیادہ اثر لڑکیوں پر ہوتا ہے۔ کیونکہ گھر میں چھوٹی سی رنجش پر اگر باہر کا کوی آدمی زرا بھی ہمدردی کے دو بول بولدے تو لڑکیاں فدا ہو جاتی ہیں۔ امید کرتے ہیں کہ آج کی یہ تحریر آپ کو ضرور پسند آئی ہوگی۔ مزید اچھی تحریروں کے لئے ہمارے پیج کو فالو اور لائیک کرے اور کمنٹ میں ضرور آگاہ کریں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *