تاہم اب سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں گائے وغیرہ کو ان شکاری جانوروں سے بچانے کا

نبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) کہاں جاتا ہے کہ ضرورت ایجاد کی ماں ہے۔ اور یہ بلکل ٹھیک کہاں گیا ہے کیوں کے انسان اپنے ضروت کے مطابق چیزے ایجاد کرتا ہے۔ اور اس پر ریسرچ کرتا ہے روز دنیا کے جن خطوں میں شیر، چیتے اور دیگر ایسے شکاری جانور پائے جاتے ہیں وہاں گائے وغیرہ جیسے جانوروں کی زندگی ہمہ وقت داﺅ پر لگی ہوتی ہے۔ تاہم اب سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں گائے وغیرہ کو ان شکاری جانوروں سے بچانے کا ایک حیران کن طریقہ بتا دیا ہے۔

ویب سائٹ arstechnica.com کے مطابق آسٹریلیا کی یونیورسٹی آف نیوساﺅتھ ویلز کے سائنسدانوں کی اس تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ اگر ہم گائے کی پشت پر پینٹ کے ذریعے دو آنکھیں بنا دیں تو اس طرح شیر اور چیتے وغیرہ اس گائے کے قریب آنے سے خوف کھانے لگتے ہیں اور اس پر حملہ نہیں کرتے۔تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ نیل جورڈن کا کہنا تھا کہ ”شکاری جانور گائے وغیرہ پر زیادہ تر پیچھے سے حملہ کرتے ہیں تاہم ہماری تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ جن گائیوں کی پشت پر آنکھیں بنا دی جائیں، شیر وغیرہ ان کے پیچھے دوڑتے ہی نہیں بلکہ ان سے ڈر کر دوسری طرف دوڑ لگا دیتے ہیں۔ ہم جانتے ہیں کہ مختلف ممالک میں کسانوں نے انتقاماً شیروں کو قتل کرکر کے ان کی نسل کو معدومی سے دوچار کر دیا ہے۔ افریقی شیروں کی 1990ءمیں تعداد 1لاکھ سے زائد تھی جو 2016ءصرف 23ہزار سے 39ہزار کے درمیان رہ گئی ہے۔ ہم اگر شیروں کو مارنے کی بجائے اپنے پالتو جانوروں کی پشت پر آنکھیں پینٹ کرنی شروع کر دیں تو نہ شیر ان پر حملہ کریں گے اور نہ شیر انتقاماً قتل کیے جائیں گے۔“ ہم امید کرتے ہے اپ کو ہماری یہ تحریر پسند آئی ہوگی۔ مزید اچھے تحریر کے لئے ہمارے پیج کو ضرور لائک اور فالو کرئے شکریہ۔

Leave a Reply

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.