بیوی قریب آنے ہی نہیں دیتی، پاکستانی نوجوان بغیر کپڑوں کے برقعہ پہن کر خوب رش والے بازار میں گھسا اور پھر وہ ہوا جس کا پاکستانی سوچ بھی نہیں سکتے

سلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )بیوی قریب آنے ہی نہیں دیتی، پاکستانی نوجوان بغیر کپڑوں کے برقعہ پہن کر خوب رش والے بازار میں گھسا اور پھر وہ ہوا جس کا پاکستانی سوچ بھی نہیں سکتے ۔۔۔۔ کراچی کے علاقے لیاقت آباد میں بغیر پینٹ کے برقعے میں ملبوس شخص کو خواتین کو ہراساں کرنے کے الزام میں پیٹ پیٹ کر پولیس کے حوالے کردیا۔کراچی کے علاقے لیاقت آباد کی مارکیٹ میں برقعے میں نیم برہنہ نوجوان کو شہریوں نے تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ پولیس کے مطابق مذکورہ نوجوان لیاقت آباد مارکیٹ میں برقعے میں بغیر پینٹ کے پھر رہا تھا اور خواتین کو دیکھ کر فحش حرکتیں کر رہا تھا۔شہریوں نے نشاندہی پر نوجوان کو تشدد کے پولیس کے حوالے کردیا۔پولیس کے مطابق مذکورہ نوجوان برقع میں بغیر پینٹ کے مارکیٹ میں گھوم رہا تھا، جب کہ ملزم نے اپنی پینٹ قریب پارک کی گئی گاڑی کی ڈرائیونگ سیٹ پر رکھی ہوئی تھی۔پولیس حکام کا مزید کہنا تھا کہ ملزم خواتین کیساتھ نازیبا حرکت کرنے کیلئے ایسے حلیے میں پھر رہا تھا، جس کے بعد نشاندہی پر شہریوں نے اسے مارا۔
پولیس نے نوجوان کو گرفتار کرکے واقعہ کا مقدمہ لیاقت آباد کے ماڈل تھانے میں درج کرلیا۔پولیس نے نوجوان کا بیان بھی ریکارڈ کر لیا ہے۔پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ نوجوان شادی شدہ ہے جب کہ اس کے دو بچے بھی ہیں۔جب کہ نجی کمپنی میں سیلزمین کی حیثیت سے کام کرتا ہے ۔پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ نوجوان نے موقف اپنایا ہے کہ اس کی بیوی اسے قریب آنے نہیں دیتی اور اس پر دباؤ ڈال رہی ہے کہ وہ دوسرا مکان کرایہ پر لے اور اپنے والدین کو چھوڑ دے۔
نوجوان کا کہنا ہے ک انہی وجوہات کے سبب وہ یہ حرکت کرنے پر مجبور ہوا۔پولیس کا کہنا ہے کہ شہری نے برقع بھی اپنی بیوی کا ہی پہنا تھا۔فحش حرکات کرنے والے نوجوان کے خلاف لیاقت آباد کے ماڈل تھانے میں مقدمہ درج کیا گیا ہے۔تاہم عدالت نے اس ی درخواست منظور کر لی تھی جس کے بعد اسے پولیس کی حراست سے رہا کر دیا گیا۔

>

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *