اونٹوں کی حضورﷺ سے شکایت

این این ایس نیوز!ایک شخص کا شاندار تھالیکن باغ کے مالک کو ایک پریشانی تھی وہ یہ کہ اس کے پاس دو اونٹ تھے جو کچھ دنوں سے پاگل اور دیوانے سے ہوگئے تھے۔ باغ میں کسی کو بھی نہ گھسنے دیتے۔ جیسے ہی باغ کے دروازے کے پاس کوئی جاتا تو اونٹ بلبلا کر اس کے پیچھے بھاگتے اور کچلنے کی کوشش کرتے۔ انہی دنوں اس باغ کے مالک نے سنا کہ حضرت محمدﷺ تشریف لائے ہیں۔ وہ دوڑتا ہوا سیدھا آقاﷺدو جہاں کے پاس گیا اور

اونٹوں کے متعلق اپنی شکائت بیان کی۔آپﷺ یہ سن کر صحابہ اکرام کو لیکر باغ کی طرف چل پڑے۔ وہاں پہنچ کر ارشاد فرمایا کہ دروازہ کھولو میں اندر جاؤنگا۔ چناچہ دروازہ کھول دیا گیا۔ دروازہ کھلا تو اونٹ دوڑتےآئے اور آتے ہی سجدہ کرنے کی غرض سے بیٹھے اور بلبلانے لگےآقاﷺ نے دونوں اونٹوں کی گردنوں پر باری باری ہاتھ پھیرا اور فرمایا لو اب یہ تنگ نہیں کریں گے یہ تمہاری شکایت کر رہے ہیں کہ ہمارے چارے کا خیال نہیں رکھتا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.